Breaking News

میاں شہباز شریف کی بھلوال سے تعلق رکھنے والے گیارہ سالہ مقتول بچے کے والد سے ملاقات‘ انصاف کی فراہمی کی یقین دہانی



Bhalwal: CM Punjab Shahbaz Sharif took notice on ali raza murder - وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی مقتول علی رضا عرف راجو کے والدسے ملاقات‘انصاف کی فراہمی کی یقین دہانی‘10 لاکھ مالی امداد کے اعلان سمیت متعلقہ پولیس افسران کیخلاف کاروائی کی ہدایت
لاہور (عاطف فاروق ڈاٹ کام) بھلوال سے تعلق رکھنے والے مقتول بچے علی رضا عرف راجو کے والد نذیر احمد سے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف کی ملاقات ‘ فرائض میں لاپرواہی برتنے پر متعلقہ پولیس افسران کیخلاف کاروائی کی ہدایت‘
مقتول بچے کے والد کو انصاف کی فراہمی کی یقین دہانی اور 10 لاکھ روپے مالی امداد کا اعلان ۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے اقبال کالونی بھلوال سے تعلق رکھنے والے گیارہ سالہ معصوم بچے علی رضا عرف راجو کے قتل کا نوٹس لے کر ڈی پی او سرگودھا ، آر پی او سرگودھا کے ساتھ مقتول بچے کے والد نذیر احمد کو گزشتہ روز اپنے سیکرٹریٹ لاہور بلایا تھا ۔ جس کے بعد مذکورہ مقتول بچے علی رضا عرف راجو کا والد نذیر احمد وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ لاہور پہنچ گیا جہاں ڈی پی او سرگودھا اور آر پی او سرگودھا کو بھی طلب کیا گیا تھا ۔ اس موقع پر مقتول بچے علی رضا عرف راجو کے والد نذیر احمد رو رو کر وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف سے انصاف طلب کرتے رہے جس پر وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے انہیں گلے لگا لیا اور انھیں یقین دہانی کروائی کہ انھیں انصاف ضرور دیا جائے گا ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے مذکورہ نذیر احمد کی ساری بات سنی اور اس واقعہ میں پولیس کی طرف سے برتی جانے والی روایتی بے حسی اور غفلت پر پولیس حکام کو آڑے ہاتھوں لیا ۔ انہوں نے قتل کے شواہد بروقت پنجاب فرانزک لیبارٹری نہ بھجوانے پر پولیس حکام کی سرزنش کی اور متعلقہ ڈی ایس پی ، ایس ایچ او اور تفتیشی افسر کو معطل کرکے ملازمت سے برخاست کرنے کی ہدایت کی ۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے مقتول بجے علی رضا عرف راجو کے والد نذیر احمد کو یقین دہانی کروائی کہ آپ فکر نہ کریں آپ کے ساتھ قانون کے مطابق انصاف کیا جائے گا ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے کہا کہ آپ کا لخت جگر تو واپس نہیں لایا جاسکتا تاہم آپ کو انصاف ضرور دلوایا جائے گا ۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے نذیر احمد کے لئے 10 لاکھ روپے کی مالی امداد کا اعلان بھی کیا ۔
Bhalwal: CM Punjab Shahbaz Sharif took notice on ali raza murder - وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی مقتول علی رضا عرف راجو کے والدسے ملاقات‘انصاف کی فراہمی کی یقین دہانی‘10 لاکھ مالی امداد کے اعلان سمیت متعلقہ پولیس افسران کیخلاف کاروائی کی ہدایت
یاد رہے کہ نذیر احمد کے گیارہ سالہ بیٹے علی رضا عرف راجو کو چند ماہ قبل نامعلوم افراد نے زیادتی کے بعد قتل کرکے نہر میں پھینک دی تھا ۔ مذکورہ علی رضا عرف راجو اپنے گھر والوں کی آنکھ کا تارا تھا جو دن کے وقت سکول پڑھنے کے لئے جاتا تھا جبکہ گھر کا پہیہ چلانے کے لئے رات کو گرم انڈے فروخت کرکے اپنے والد کا ہاتھ بٹاتا تھا ۔ معصوم علی رضا کے قتل کے بعد نذیر احمد نے بھلوال میں جلیبی چوک میں احتجاج بھی کیا جس میں پولیس حکام نے اُسے یقین دہانی کروائی کہ اس کے بچے کے قاتلوں کو جلد گرفتار کرکے سزا دی جائے گی ۔تاہم یہاں بھی پولیس کی روایتی بے حسی آڑے آئی اور پولیس کی کاروائی ایف آئی آر سے آگے نہ بڑھ سکی ۔ اس دوران نذیر احمد نے ہمت نہ ہاری اور انصاف کے حصول کے لئے تھانہ بھلوال کے چکر لگاتا رہا ۔ اس نے میڈیا کے ذریعے متعدد بار وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف سے انصاف کی فراہمی کا مطالبہ بھی کیا ۔ جب کسی جگہ شنوائی نہ ہوئی تو مذکورہ نذیر احمد کوٹ مومن میں میاں محمد نواز شریف کے جلسے میں جاپہنچا اور وہاں رو رو کر انصاف کے لئے دہائی دیتا رہا لیکن وہاں بھی اس کی بات کسی نے نہ سنی ۔ تاہم وزیرا علیٰ پنجاب نے مذکورہ جلسے میں اس کی آہ و بکا پر نوٹس لے لیا اور نہ صرف اسے بلکہ ڈی پی او سرگودھا اور آر پی او سرگودھا کو بھی لاہور طلب کرلیا ۔ 
 
وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف کے اس اقدام کو بھلوال کے سیاسی و سماجی حلقوں میں خوب سراہا جارہا ہے ۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے جس طرح اس غریب دکھیارے کی داد رسی کی ہے اس کی مثال نہیں ملتی ۔ تاہم اس واقعہ میں پولیس کی غفلت اور روایتی بے حسی انتہائی افسوس ناک پہلو ہے ۔ بھلوال سے سیاسی و سماجی حلقوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے اپیل کی ہے کہ وہ پولیس کے نظام میں ایسی مثبت تبدیلیاں لانے کے لئے بھی اقدامات عمل میں لائیں جس سے غریب عوام کو انصاف کی فراہمی ممکن ہوسکے اور مجرموں کی سرکوبی ہوسکے ۔ 
 اس تحریر پر اپنی رائے ضرور دیجئے ، شکریہ ۔

Widget is loading comments...






Widget is loading comments...