Breaking News

شوگر ملز کیطرف سے گنا 180کی بجائے80روپے فی من خریدنا افسوسناک ہے : ڈاکٹر ارشد شاہد



purchase of sugarcane in Rs. 80 instead of 180 is shameful: Dr. Muhammad Arshad Shahid - شوگر ملز کیطرف سے گنا 180کی بجائے80روپے فی من خریدنا افسوسناک ہے : ڈاکٹر ارشد شاہد
سرگودھا(عاطف فاروق ڈاٹ کام)نائب امیر جماعت اسلامی و امیدوار این اے 66ڈاکٹرارشدشاہد نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے کسانوں سے 180روپے فی من گنا خریدنے کے احکامات جاری کیے تھے مگر افسوس ناک امر یہ
ہے کہ ان کے احکامات پر کہیں بھی عمل درآمد نہیں ہورہا۔ شوگر ملوں کے باہر بیس پچیس میل لمبی ٹرالیوں کی لائنیں لگی ہوئی ہیں۔کسانوں کو مجبور کرکے ان سے شوگر مل مالکان گنا 180روپے فی من سرکاری ریٹ کی بجائے صرف 80روپے من خرید رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی پنجاب کی جانب سے لاہور ہائیکورٹ میں دائر کردہ رٹ میں بھی عدالت عالیہ نے یہ حکومت پنجاب کو حکم جاری کیا ہے کہ وہ 22دسمبر تک پنجاب کی تمام شوگر ملوں کو فنگشنل کرائے اور مل مالکان کوپابند کیاہے کہ وہ کسانوں سے سرکاری ریٹ کے مطابق گنا 180روپے فی من خریدے۔ کسانوں کا استحصال کیاجارہا ہے۔گنا شوگر ملوں کے باہرپڑاسڑ رہاہے لیکن کسانوں کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ شوگر ملوں کے باہر کنڈے لگائے جائیں تاکہ کسانوں کے ساتھ کوئی حق تلفی نہ ہوسکے۔ کسانوں کا پہلے ہی براحال ہے۔ 30نومبر تک شوگر ملوں کوپنجاب میں فنگشنل ہوناچاہئے تھا۔پنجاب کی ساری شوگرملیں بھی فنگشنل ہوجائیں تب بھی گنے کی پوری فصل شوگرملیں نہیں خریدسکیں گی اوراس طرح کسانوں کوبڑا نقصان ہوگا،حکومت پنجاب کواس اہم معاملے کا فوری نوٹس لینا چاہئے۔انہوں نے کہاکہ گناپڑے رہنے کی وجہ سے گندم کی اگلی فصل بھی تاخیر کا شکار ہے جس کی وجہ سے اگلے سال خاصے مسائل پیداہوسکتے ہیں۔