Breaking News

مین شاہراﺅں پر ٹرالیوں کی وجہ سے ٹریفک میں رکاوٹ برداشت نہیں کی جائیگی: ڈپٹی کمشنر لیاقت چٹھہ


مین شاہراﺅں پر ٹرالیوں کی وجہ سے ٹریفک میں رکاوٹ برداشت نہیں کی جائیگی: ڈپٹی کمشنر لیاقت چٹھہ
سرگودھا (عاطف فاروق ڈاٹ کام)ڈپٹی کمشنر سرگودہا لیاقت علی چٹھہ نے شوگر ملز مینجمنٹ کو گنے کے کرشنگ سیزن کے دوران ہائی ویز پر ٹریفک کے تسلسل کو برقرار رکھنے کیلئے قابل عمل حکمت عملی تیار کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ اس ماہ
بیس نومبر سے گنے کا کرشنگ سیزن شروع ہو رہا ہے لیکن یہ بات مشاہدہ میں آئی ہے کہ کرشنگ سیزن شروع ہوتے ہی شوگر ملز کے اطراف میں گنے کی ٹرالیوں کی قطاروں کی وجہ سے ٹریفک کا نظام بری طرح فیل ہو کر رہ جاتا ہے۔ جسکی وجہ سے شاہرات پر لاکھوں مسافروں کو پریشانی اٹھانا پڑتی ہے ۔ اس صورتحال کو بہتر بنانے کیلئے شوگر ملزانتظامیہ کو ابھی سے ملز کے سامنے روڈ پرٹریفک نظام کو بحال رکھنے کیلئے ایسا لائحہ عمل اختیار کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ہائی ویز پر ٹریفک کے تسلسل میں روکاوٹ پیدا نہ ہو ۔انہوں نے یہ بات شوگر ملز مینجمنٹ اور انتظامی افسران کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔اجلاس میں اے ڈی سی ریونیو طارق خان نیازی اور اسسٹنٹ کمشنر وں کے علاوہ ایکسےن ہائی ویز اور شوگر ملز مینجمنٹ نے شرکت کی۔ڈپٹی کمشنر نے شوگر ملز مینجمنٹ کو ٹریفک کی گھمبیر صورتحال کا مقابلہ کرنے کیلئے شوگر ملز کے سامنے مین روڈ پر سروس روڈ بنانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اس صورتحال سے ٹریفک کے بہاﺅمیں رکاوٹ پیدانہیں ہو گی جس سے مسافروں کو کسی قسم کی پریشانی سے دوچارہو نا پڑے ۔ اجلاس میں ڈی سی نے محکمہ ہائی ویز کو شوگر ملز کی حدود میں زیر تعمیر سڑکوں کی فوری تعمیر کو یقینی بنانے کی ہدایت کر دی ہے۔ اس موقع پر ایکسےن محکمہ ہائی ویز اور شوگر ملز انتظامیہ نے ڈپٹی کمشنر کو شوگر ملز کی حدود میں زیر تعمیر سڑکوں اور سروس روڈ ز کی پراگراس کے بارے میں بریفنگ دی ۔ ڈپٹی کمشنر نے کام کی رفتار کو تیز کرنے ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ مین روڈ پر ٹرالیوں کی وجہ سے ٹریفک میں رکاوٹ ہر گز برداشت نہیں کی جائی گی اور خلاف ورزی کے مرتکب افراد کے خلاف سخت انضباطی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ شوگر ملز انتظامیہ نے ڈی سی کو اس ضمن اپنے بھر پور تعاون کا یقین دلایا ۔ اس موقع پر ڈی سی نے مہلک حادثات سے بچنے کیلئے گنے کی ٹرالیوں کے پیچھے ریفلیکٹر لگانے کی ہدایت کی۔
DC Sargodha Liaqat Ali Chatha Addressing to Sugar Mills Management