Breaking News

رورل ڈویلپمنٹ پیکج اور خادم پنجاب صاف دیہات پروگرام کے تحت میگا پراجیکٹ کیلئے 18 ارب روپے مختص


سرگودہا(بدھ: 08 نومبر 2017 ء )صوبہ پنجاب میں رورل ڈویلپمنٹ پیکج اور خادم پنجاب صاف دیہات پروگرام کے تحت ساڑھے 18 ارب روپے کا میگا پراجیکٹ شروع کیا جا رہا ہے۔ اس پروگرام کے تحت ہر یونین کونسل میں پچیس لاکھ اور
میونسپل وارڈ میں پانچ لاکھ روپے کے فندز مہیا کئے جارہے ہیں۔ اس پروگرام کے تحت سولہ نومبر سے تیس نومبر تک لوکل گورنمنٹ افسران کی ٹریننگ ہو گی۔ تیس نومبر کو میڈیا کے ذریعے آگاہی مہم شروع کی جائے گی۔ گیارہ دسمبر کو اسی پروگرام کا افتتاح کیا جائیگا۔ گیارہ دسمبر سے دس جنوری تک دیہات کی صفائی کا عمل مکمل ہو گا۔اس امر کا انکشاف ضلع رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا۔ اجلاس کی صدارت ایم پی اے سردار بہادر عباس میکن کر رہے تھے۔ اجلاس میں دیگر شرکاء میں ایم این اے ڈاکٹر ذوالفقار علی بھٹی، ایم پی اے غلام دستگیر لک ، عبدالرزاق ڈھلوں ،رانا منور غوث،فیصل فاروق چیمہ، میئر کارپوریشن،ملک اسلم نوید ، اے ڈی سی طارق خان نیازی ، ملک عزیز الحق اور سردار احمد حیات بلوچ کے علاوہ دیگر محکموں کے ضلعی سربراہوں نے شرکت کی۔ اجلاس کو بتایاگیا کہ رورل ڈویلپمنٹ پیکج اور خادم پنجاب صاف دیہات پروگرام وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کا تاریخی اقدام ہے ۔ جس کامقصد دیہات کی ترقی اور خوشحالی کیلئے اقدامات کرناہے ۔ اس پروگرام کے تحت تمام سکیمیں ڈپٹی کمشنر کادفتر شروع کرائے گا ۔جس کی نشاندہی مقامی لوکل باڈی کے نمائندے کریں گے ۔ سکیموں میں گلیوں او رنالیوں کی تعمیر کے علاوہ سولنگ اور پی سی سی شامل ہوں گی ۔ نیز دیہات کی صفائی ‘ قبرستانوں کی چار دیواری ‘ لاری اڈوں میں مسافرخانوں کی تعمیر کے علاوہ واٹر فلٹریشن پلانٹس بجلی کی فراہمی وغیرہ کی سکیمیں شامل ہوں گی ۔ اس پروگرام کے تحت ہر یونین کونسل میں صفائی کیلئے عملہ صفائی کی بھرتی کی جائے گی ۔ علاوہ ازیں اجلاس میں ہائی وے کی سکیموں پر کام کی رفتار کاجائزہ لیتے ہوئے بتاگیا گیاکہ محکمہ ہائی ویز کے زیر اہتمام 158سکیموں کیلئے 2017کے دوران دو ارب 85 کروڑ بیس لاکھ روپے جاری کئے گئے جس میں سے ایک ارب 25کروڑ 80لاکھ روپے کے اخراجات ہو چکے ہیں ۔ اسی طرح اجلاس کو بتایا گیا کہ پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ کی 144سکیموں کیلئے 63کروڑ 77لاکھ روپے جاری کئے گئے ان سکیموں پر کام جاری ہے ۔ اجلاس کو بتایاگیا کہ محکمہ بلڈنگ کی 54سکیموں کیلئے 66 کروڑ 57لاکھ روپے میں سے اب تک 27کروڑ کے اخراجات ہو چکے ہیں ۔ اجلاس کو بتایاگیا ضلع سرگودہا میں وزیر اعظم کے خصوصی ترقیاتی پروگرام 2016-17کے تحت 321سکیموں پر 32کروڑ 82لاکھ ‘ اسی پروگرام کے دوسرے مرحلہ کی 65سکیموں کیلئے 52لاکھ کے اخراجات ہوچکے ہیں ۔اجلاس میں گنے کے کرشنگ سیزن کے دوران ٹرالیوں کے پیچھے ریفلکٹر لگانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا گیاکہ ریفلکٹر نہ لگانے کی وجہ سے مہلک حاثات واقع ہوتے ہیں اسی طرح گنے کی ٹرالیوں کی اوورلوڈنگ کو روکنے کیلئے ٹریفک پولیس کو فعال کردارا د ا کرنے کی ضرورت پر زور دیا گیا ۔ اجلاس میں ٹریفک پولیس کی کارکردگی پر عدم اطمینا ن کا اظہار کر تے ہوئے کہاگیاکہ ایک شہر میں پابندی کے باوجود ہیو ی ٹریفک اور یونیورسٹی روڈ پرکمرشل گاڑیوں کی روانی ٹریفک پولیس کیلئے لمحہ فکریہ ہے ۔ اسی طرح جنرل بس سٹینڈ کے سامنے روڈ پر گاڑیوں کے کھڑے ہونے سے ٹریفک متاثر ہو رہی ہے ۔ اجلاس کو بتایاگیاکہ ضلع بھر میں مختلف محکموں کے زیر اہتمام 1832 ترقیاتی سکیموں پر بورڈز آویزاں کئے جانے تھے جن میں سے اب تک 442 سکیموں پر بورڈ ز آویزاں کئے گئے ہیں جن میں محکمہ پبلک ہیلتھ کی322میں سے 120 سکیموں اور محکمہ لوکل گورنمنٹ کی 853میں سے 278 سکیموں پر بورڈ آویزاں کئے جاچکے ہیں جبکہ ہائی وے کی 140سکیموں میں سے 43 سکیموں پر بورڈز آویزاں کئے گئے ۔ اجلاس میں بورڈآویزا ں کرنے کیلئے پندرہ نومبر کی ڈیڈلائن دے دی گئی ۔