Breaking News

بھٹہ مزدوروں کے بچوں کی تعلیم و تربیت کیلئے ضلعی حکومت نے 1 کروڑ 7 لاکھ کے فنڈز جاری کردئیے


child labour on bhatta khasht in pakistan - بھٹہ خشت پر بچوں سے مشقت
سرگودہا (عاطف فاروق ڈاٹ کام ) ڈپٹی کمشنر لیاقت علی چٹھہ نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب بھٹہ مزدوروں کے بچوں کی تعلیم وتر بیت اور ان سے جبری مشقت کے خاتمہ کیلئے بھر پور اقدامات کر رہی ہے ۔ بھٹہ مزدوروں کے بچون کیلئے کتابوں
‘ یونیفارم ‘ شوز اور بیگز وغیرہ کی خریداری کیلئے حکومت نے ایک کروڑ سات لاکھ روپے کے فنڈز مہیا کر دےئے ہیں ۔ وہ آج اپنے دفتر کے کمیٹی روم میں ڈسٹرکٹ ویجیلنس کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کررہے تھے ۔ اجلاس میں ایم پی اے رانا منور غوث ‘ ا ے ڈی سی جی ملک آصف اقبال ‘ سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر نصرت ریاض ‘ اسسٹنٹ ڈائریکٹر لیبر عزیر عباس ‘میونسپل کمیٹیوں کے چےئرمین صاحبان ‘ بھٹہ مالکان اور لیبر یونین کے نمائندوں کے علاوہ ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفےئر ناصر محمود چیمہ ‘ سوشل سیکورٹی اور لاء آفیسر ز نے بھی شرکت کی۔ اجلاس کو بتایاگیا کہ ضلع سرگودہا میں 308 اینٹوں کے بھٹے موجود ہیں ۔ جہاں 6481 بچوں کی نشاندہی کی جاچکی ہے جن میں سے 5844 بچوں کو تصدیق ہو چکی ہے جبکہ خدمت کارڈ کیلئے 6214 بچوں کو اہل قرار دیاگیا ہے ۔ جن میں سے 2904 والدین کو خدمت کارڈ دینے کا ٹارگٹ مقرر کیا گیا تھا جن میں سے اب تک 2507 کو خدمت کارڈ جاری ہو چکے ہیں ۔ ضلع بھر میں 128 مقامات کا معائنہ کیاگیا جن میں سے 47۔افراد کے خلاف قانونی کاروائی او ر56کے خلاف پرچے درج کرائے گئے جبکہ 1435۔افراد کو شناختی کارڈ او ر581 ۔افراد کو آر 5- کارڈ جاری کئے جاچکے ہیں ۔ اسی طرح ضلع بھر میں 32 بھٹوں پر سکول کام کر رہے ہیں ۔ یہاں پر 783 بچے داخل ہیں ۔ اجلاس میں ڈپٹی کمشنر نے چےئرمین میونسپل کمیٹیز کو ہدایت کی کہ بھٹوں پر سکولوں کے بارے میں جائزہ رپورٹ پیش کی جائے ۔