Breaking News

ندیم افضل چن ‘پیپلزپارٹی نہیں چھوڑ رہے ‘ محض جنرل سیکرٹری وسطی پنجاب کے عہدے سے استعفیٰ دیا ہے


ch. nadeem afzal chan with asif ali zardari and bilawal bhutto zardai
اسلام آباد ۔۔۔۔۔چوہدری ندیم افضل چن نے پاکستان پیپلزپارٹی وسطی پنجاب کے جنرل سیکرٹری کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے تاہم ان کے استعفے کے بعد عجیب و غریب صورتحال سامنے آرہی ہے ۔ بعض حلقے ان کے استعفے کو پاکستان
تحریک انصاف میں شمولیت کے ساتھ جوڑ رہے ہیں اور سوشل میڈیا پر ان قیاس آرائیوں کا طوفان امڈ آیا ہے کہ چوہدری ندیم افضل چن نے پاکستان پیپلزپارٹی سے استعفیٰ دے کر پاکستان تحریک انصاف کو جوائن کرلیا ہے جو کہ سراسر غلط تاثر ہے ۔ چوہدری ندیم افضل چن نے پیپلزپارٹی وسطی پنجاب کے جنرل سیکرٹری کے عہدے سے استعفیٰ ضرور دیا ہے لیکن پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار نہیں کی ۔ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی کو پیش کئے گئے استعفے میں واضح طور پر یہ لکھا ہے کہ انہوں نے اپنا استعفیٰ اپنے چھوٹے بھائی وسیم افضل چن کی پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کی وجہ سے دیا ہے ۔ وسیم افضل چن کی تحریک انصاف میں شمولیت کے بعد وہ اخلاقی طور پر سمجھتے ہیں کہ انہیں پاکستان پیپلزپارٹی وسطی پنجاب کے جنرل سیکرٹری کے عہدے سے مستعفی ہوجانا چاہیے ۔ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی کو پیش کئے جانے والے استعفیٰ کے آخری حصہ میں انہوں نے پاکستان پیپلزپارٹی کی اعلیٰ قیادت کو اس امر کی یقین دہانی بھی کروائی ہے کہ ان کی وفاداری اور خیرخواہی پر شک نہ کیا جائے وہ اسی جذبے اور صلاحیتوں سے پاکستان پیپلزپارٹی کے لئے اپنی خدمات سرانجام دیتے رہیں گے ۔ ندیم افضل چن کی طرف سے پیش کئے گئے استعفیٰ کو پڑھنے کے بعد یہی تاثر ملتا ہے کہ انہوں نے محض پاکستان پیپلزپارٹی وسطی پنجاب کے جنرل سیکرٹری کے عہدے سے استعفیٰ دیا ہے ، پیپلزپارٹی کو خیرباد نہیں کیا ۔ لہذا اس استعفیٰ سے یہ تاثر لیا جانا کہ چوہدری ندیم افضل چن نے پیپلزپارٹی چھوڑ کر تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرلی ہے بالکل غلط ہے۔ ذرائع سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ بلاول بھٹو زرداری نے چوہدری ندیم افضل چن کا استعفیٰ قبول کرنے سے انکار کردیا ہے مزید غیر متصدقہ اطلاعات یہ بھی ہیں کہ آصف علی زرداری نے چوہدری ندیم افضل چن کو ملاقات کے لئے کراچی بلالیا ہے ۔